عامر کو شعیب اختر اور ہربھجن سنگھ کے معاملے میں نہیں پڑنا چاہیے تھا! ان کو ہر بھجن سے معافی مانگ لینی چاہیے۔۔ سعید اجمل

Aise logo ka aisa hi hota hai' – Saeed Ajmal criticises Mohammad Amir over retirement fiasco

پاکستان کے سابق اسپنر سعید اجمل نے پاکستان کے خلاف ہندوستان کی 10 وکٹوں کی شکست کے بعد ہربھجن سنگھ کے ساتھ بدصورت ٹویٹر بات چیت پر محمد عامر کو تنقید کا نشانہ بنایا۔

کیا ہربھجن نے اپنا ٹی وی توڑ دیا؟، تیز گیند باز نے 24 اکتوبر کو بھارت کے خلاف ورلڈ کپ میں پاکستان کی 12 میچوں میں شکست کے سلسلے کو توڑنے کے بعد ٹویٹ کیا تھا۔ چند صحافیوں کے ساتھ ساتھ یہ ایک معمولی تنازعہ میں بدل گیا۔

تفصیلات کے مطابق کھیل کی تیاری میں تیز گیند باز شعیب اختر اور ہربھجن کے درمیان دوستانہ بات چیت ہوئی جس میں عامر بھی شامل ہوئے۔ ہربھجن نے اپنے الفاظ کو کم نہیں کیا، کیونکہ اس نے عامر کو 2010 کے بدنام زمانہ میچ فکسنگ اسکینڈل کی یاد دلائی۔

اس دوران اجمل نے کہا کہ عامر کو اختر اور ہربھجن کے درمیان ہونے والی بات چیت میں مداخلت نہیں کرنی چاہیے تھی اور اپنے رویے پر معافی مانگنی چاہیے۔

“کھلاڑیوں کو ایک دوسرے کے ساتھ اچھا سلوک کرنا چاہئے کیونکہ کھیل لوگوں کو اکٹھا کرتے ہیں۔ مجھے لگتا ہے کہ عامر نے اس گفتگو میں کود کر غلطی کی ہے اور انہیں اس کے لیے معافی مانگنی چاہیے۔ یہ دو عظیم کرکٹرز کے درمیان بحث تھی اور عامر نے اس میں شامل ہو کر غلط انتخاب کیا۔

اجمل نے ہندوستانی تیز گیند باز محمد شامی کے ساتھ ہونے والے سلوک کے بارے میں بھی بات کی۔اُن کا کہنا تھا کہ کھلاڑی کھیل کھیلتا ہے، مذہب نہیں کھیلتا۔ کھلاڑیوں کو ان کے مذہب کی بنیاد پر ہراساں کرنا درست نہیں۔

واضح رہے کہ پاکستان نے بھارت کو جاری ورلڈکپ میں عبرتناک شکست سے دوچار کیا تھا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *