پاکستان کیلئے ورلڈ کپ جیتا تو اسے اپنی بیٹی کے نام کروں گا: آصف علی

Asif Ali to return Pakistan following his daughter's demise

قومی ٹیم کے مڈل آرڈر جارح مزاج بلے باز آصف علی کا کہنا ہے کہ پاکستان کے لیے ورلڈ کپ جیتا تو اسے اپنی بیٹی کے نام کروں گا۔

ایک انٹرویو میں آصف علی کا کہنا تھا کہ میں اپنی بیٹی کے علاج کے لیے ایک سال سے بھاگ دوڑ کررہا تھا جب کہ اس کے ساتھ ساتھ پاکستان سوپر لیگ اور انٹرنیشنل کرکٹ بھی کھیل رہا تھا۔ میری فیملی ، اہلیہ اور بھائی نے میرا بہت ساتھ دیا تھا۔ ہم نے 20 سے 25 ڈاکٹر تبدیل کیے۔

آصف علی کا کہنا تھا کہ مجھ سے اپنی بیٹی کی تکلیف دیکھی نہیں جارہی تھی لیکن اسے اللہ تعالی کی آزمائش سمجھ کر برداشت کرتا رہا۔ میری بیٹی کئی کئی راتیں سو نہیں پاتی تھی۔

آصف علی نے کہا کہ میں اللہ تعالی سے دعا کرتا تھا کہ وہ میری بیٹی کی مشکل آسان کرے اور اسے اپنے پاس بلا لے کیوں کہ جو اللہ پاک کرتے ہیں وہ سب کے لیے بہتر ہوتا ہے۔

آصف علی کی کم سن بیٹی مئی 2019ء میں امریکہ میں انتقال کر گئی تھی۔ آصف علی کی 2 سالہ بیٹی نور فاطمہ کئی ماہ سے بیمار تھی اور کینسر جیسے موضی مرض کے باعث امریکہ کے ہسپتال میں زیر علاج تھی، نور فاطمہ کا کینسر سٹیج فور پر تھا۔

تاہم آصف علی کا کہنا ہے کہ اگر ہم ورلڈکپ جیت گۓ تو میں اُسے اپنی بیٹی کے نام کروں گا۔ اُن کا کہنا ہے کہ میں نے ساتھی کھلاڑیوں سے بات کی ہے اور وہ اپنی پوری کوشش کریں گے کہ ہم ورلڈکپ جیت جائیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *